Abul Ala Maududi(With tafsir)

پھر اٹھا کھڑا کیا ہم نے تم کو مر گئے پیچھے تاکہ تم احسان مانو ۸۴